20

پنجاب کے مالی سال 25-2024 کا تاریخی بجٹ آج پیش کیا جائے گا

پنجاب کے مالی سال 25-2024 کا بجٹ آج پیش کیا جائے گا جس کا کل حجم 5446 ارب روپے ہونے کا امکان ہے۔ موصول ہونے والی بجٹ دستاویزات کے مطابق صوبائی وزیر خزانہ مجتبیٰ شجاع الرحمان بجٹ پیش کریں گے، محکمہ خزانہ پنجاب کو 3700 ارب وفاق سے این ایف سی کے تحت ملنے کی امید ہے ذرائع کے مطابق پنجاب میں ذرائع آمدن کی مد میں محصولات کا ہدف ایک ہزار 26 ارب روپے ہو گا اور تنخواہوں کی مد میں 595 ارب اور پنشن کی مد میں 445 ارب روپے رکھے جائیں گے جبکہ سروس ڈیلیوری اخراجات کا تخمینہ 840 ارب روپے لگایا گیا ہے۔ ترقیاتی بجٹ کا حجم 842 ارب روپے مختص کرنے کی تجویز ہے، لاہور رمضان پیکیج کیلئے 30 ارب، سی بی ڈی کو 8 ارب دیئے جائیں گے جبکہ آئندہ مالی سال میں 1863 سکیموں کو مکمل کیا جائیگا آئندہ مالی سال میں 1617 جاری جبکہ 246 نئی سکیمیں مکمل کرنے کی تجویز ہے، سب سے زیادہ بجٹ روڈ سیکٹر سکیموں کے لیے 1 کھرب 21 ارب 74 کروڑ 60 لاکھ مختص کیا گیا ہے۔ بجٹ میں سپیشل ایجوکیشن کے لیے 2 ارب، لٹریسی و نان فارمل ایجوکیشن کیلئے 3 ارب 50 کروڑ مختص کیے گئے ہیں جبکہ سپورٹس اینڈ یوتھ افیئر کے لیے 4 ارب 87 کروڑ 50 لاکھ مختص کرنے کی تجویز ہے ذرائع کے مطابق سپیشلائزڈ ہیلتھ کیئر کیلئے 76 ارب 61 کروڑ 50 لاکھ اور پرائمری ہیلتھ کیئر کے لیے 33 ارب 89 کروڑ 70 لاکھ مختص ہوں گے، پاپولیشن ویلفیئر کیلئے 3 ارب، واٹر سپلائی اینڈ سینی ٹیشن کیلئے 8 ارب 9 کروڑ 90 لاکھ مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ سوشل ویلفیئر کیلئے ایک ارب 5 کروڑ 79 لاکھ ، وومن ڈیویلپمنٹ کیلئے 92 کروڑ 60 لاکھ مختص ہوں گے، اسی طرح لوکل گورنمنٹ کیلئے 14 ارب 4 کروڑ 80 لاکھ رکھنے کی تجویز ہے ذرائع کے مطابق بجٹ میں محکمہ پولیس کے لئے ایک کھرب 87 ارب 36 کروڑ روپے رکھے گئے ہیں، انڈسٹری اینڈ کامرس کے لیے 24 ارب روپے مختص کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ محکمہ زراعت کے لئے 1 کھرب 70 ارب 19 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں جبکہ گزشتہ سال زراعت کے لئے 79 ارب روپے تھے اسی طرح محکمہ ایریگیشن کے لیے 63 ارب 16 کروڑ روپے مختص کیے گئے ہیں جبکہ گزشتہ سال ایریگیشن کے لیے 52 ارب کا بجٹ تھا ذرائع کا کہنا ہے کہ محکمہ لائیو سٹاک کے لیے 29 ارب 52 کروڑ روپے مختص کرنے کی تجویز ہے، گزشتہ سال لائیو سٹاک کے لیے 21 ارب 54 کروڑ روپے مختص کیے گئے تھے، پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کے لیے 3 کھرب 6 ارب روپے مختص کیے گئے ہیں، گزشتہ سال پلاننگ اینڈ ڈویلپمنٹ کا بجٹ 1 کھرب 21 ارب تھا۔ واضح رہے کہ مختص بجٹ کی حتمی منظوری اسمبلی اجلاس سے پہلے صوبائی کابینہ دے گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں