47

شیریں مزاری کا نام ایک ہفتے کے اندر نام پاسپورٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا حکم

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیر شیریں مزاری کا پاسپورٹ کنٹرول لسٹ سے نام نکالنے کی درخواست پر تفصیلی فیصلہ جاری کردیا جس میں عدالت نے ایک ہفتے کے اندر نام پاسپورٹ کنٹرول لسٹ سے نکالنے کا حکم دیا ہے عدالت نے فیصلے میں لکھا دوران سماعت بتایا گیا کرمنل کیسز کے تفتیشی افسر کی سفارش پر نام پی سی ایل میں ڈالا گیا، تفتیشی افسر سے اس بابت ریکارڈ طلب کیا تو پیش نہ کیا جاسکا تفصیلی فیصلے میں کہنا تھا کہ ایڈیشنل اٹارنی جنرل سے استفسار کیا گیا اسلام آباد میں اورکتنےملزمان کا نام پی سی ایل پرہے، ایڈیشنل اٹارنی جنرل عدالت کے سوال پر کوئی جواب دینے میں ناکام رہے، بیس جولائی کا فیصل مقبول شیخ کی درخواست پر جاری فیصلہ بھی اسی نوعیت کا ہے عدالت کا کہنا تھا کہ فیصل مقبول شیخ کیس کے فیصلے کو کہیں چیلنج نہیں کیا گیا،یہ فیصلہ حتمی شکل اختیارکرچکاہے، سرکاری وکیل نے بتایا شیریں مزاری نے گرفتاری کے بعد قانون کے مطابق ضمانت لی، ڈاکٹر شیریں مزاری کوسات میں سے پانچ مقدمات میں ضمانت ملی، دو میں ڈسچارج کردیا گیا فیصلے میں کہا ہے کہ درخواست گزار شیریں مزاری کسی مقدمے میں مفرور یا اشتہاری بھی نہیں، ڈی جی پاسپورٹ اینڈ امیگریشن ایک ہفتے میں نام پی سی ایل سے نکال کر رپورٹ جمع کرائیں، پٹیشنر کا نام پاسپورٹ کنٹرول لسٹ میں شامل کرنے سے پہلے آگاہ نہیں کیاگیا، پی سی ایل میں نام ڈالنے سے قبل شوکاز نوٹس بھی جاری نہیں کیا گیا، اس اقدام سے فریقین کی بدنیتی ظاہر ہوتی ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں