17

افغانستان میں دریا عبور کرنے کے دوران کشتی ڈوب گئے،بچوں سمیت 20 افراد جاں بحق

افغانستان کے صوبے ننگر ہار میں دریا میں کشتی ڈوبنے سے 20 افراد جاں بحق ہوگئے۔ افغان میڈیا نے ننگرہار کے گورنر کے حوالے سے بتایا کہ کشتی میں خواتین اور بچوں سمیت 25 افراد سوار تھے۔ ڈوب کر جاں بحق افراد میں سے 5 کی لاشیں نکال لی گئی ہیں غیر ملکی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق صوبہ ننگرہار کے محکمہ اطلاعات کے سربراہ نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ’ایکس‘ پر بتایا کہ ہفتے کی صبح 7 بجے مشرقی ننگرہار کے ضلع مومند درہ کے باسول علاقے میں دریا میں ایک کشتی ڈوب گئی، جس میں خواتین اور بچے سوار تھے۔ ان کا کہنا تھا کہ حادثے کی وجوہات کی تحقیقات کی جا رہی ہیں ننگرہار کے انفارمیشن اینڈ کلچر ڈیپارٹمنٹ نے میڈیا کے ساتھ شیئر کیے گئے ایک پیغام میں کہا کہ حکام نے علاقے میں میڈیکل ٹیم اور ایمبولینس بھیجی ہیں۔ صوبائی حکام نے بتایا کہ کم از کم پانچ افراد کی لاشیں نکال لی گئی ہیں جبکہ دیگر کو تلاش کرنے کے لیے کوششیں جارہی ہیں۔ مقامی میڈیا کے مطابق خراب حالت میں کشتیوں کا استعمال کرتے ہوئے علاقے کے رہائشی اکثر دریا عبور کرتے ہیں، جبکہ قریب میں کوئی پل نہیں ہے کشتی ڈوبے کا واقعہ ننگر ہار کے مومند درہ ضلع میں ہفتے کی صبح پیش آیا۔ کشتی ڈوبنے کی وجوہات کا علم نہیں ہو سکا ہے۔ ریسکیو ٹیمیں ڈوبنے والوں اور لاشوں کی تلاش کے آپریشن میں مصروف ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں