17

پی ایف یو جے نے عدالتی کارروائی کی نشریات کیخلاف پیمرا نوٹیفکیشن چیلنج کردیا

اسلام آباد : پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس ( پی ایف یو جے) نے عدالتی کارروائی کی نشریات کیخلاف پیمرا کا نوٹیفکیشن اسلام بادہائیکورٹ میں چیلنج کردیا تفصیلات کے مطابق عدالتی کارروائی کی نشریات کیخلاف پیمرا نوٹیفکیشن ایک بار پھر اسلام آبادہائیکورٹ میں چیلنج کردیا گیا ، پاکستان فیڈرل یونین آف جرنلسٹس کی جانب سے درخواست دائر کی گئی وائس چیئرمین اسلام آباد بارکونسل عادل عزیز قاضی کے ذریعے دائر درخواست میں کہا گیا کہ 21 مئی 2024 کو پیمرا کی جانب سے 2 نوٹیفکیشن جاری کیے گئے، ٹی وی چینلزکوعدالتی کارروائی رپورٹ نہ کرنے کے احکامات جاری کیے گئے صرف عدالتی تحریری حکم ناموں کو ہی رپورٹ کرنے کے احکامات جاری کیے گئے درخواست میں کہا گیا کہ پیمرا نےعام عوام کےمعلومات تک رسائی کے حق کی خلاف ورزی کی ، پیمرا کی جانب سے اپنے نوٹیفکیشن میں سپریم کورٹ کے فیصلے کی غلط تشریح کی گئی ہے درخواست گزار کا کہنا تھا کہ پیمرا کا21 مئی کا نوٹیفکیشن آئین کے آرٹیکل 19 اور 19 اےون کی خلاف ورزی ہے، پیمرا نوٹیفکیشن پیمراآرڈیننس 2002 کی روح کےبھی خلاف ہے درخواست میں استدعا کی گئی کہ عدالتی کارروائی کی رپورٹنگ پر پابندی کا 21 مئی کا نوٹیفکیشن کالعدم قراردیاجائے اور پیمرا کوانسانی بنیادی حقوق کیخلاف کوئی بھی نوٹیفکیشن یااحکام جاری کرنے سے روکا جائے یاد رہے پیمرا نے زیرسماعت کیسزسےمتعلق خبریں چلانے پر پابندی عائد کی ہے، پیمرا نے ہدایت جاری کی کسی بھی کیس کا حتمی فیصلہ آنےتک ٹی وی چینلز عدالتی سماعت کی خبرنہیں چلائیں گے اور زیر سماعت کیسز سے متعلق صرف وہ معلومات دی جائیں گی جو مفادعامہ کے لیے ہوں گی

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں