20

اوور بلنگ پر لیسکو کے 7 افسران پر مقدمہ درج ہو گیا

ذرائع ایف آئی اے کے مطابق لاہور میں سرکل تھری کے 5 ایس ڈی اوز اور 2 ریونیو افسران کے خلاف اوور بلنگ پر مقدمہ درج کیا گیا ہے
ایف آئی اے ذرائع کا کہنا ہے کہ مذکورہ افسران پر گزشتہ 2 سال میں تعیناتی کے دوران اوور بلنگ کرنے کا الزام ہے، اوور بلنگ کے حوالے سے 10 ایکسین اور 25 ایس ڈی اوز کی فہرست بھی ڈی جی کو بھجوائی گئی ہے ذرائع کا کہنا ہے کہ لیسکو کے متعدد افسران آج بھی ایف آئی اے میں پیش نہیں ہوئے یاد رہے کہ 7 اپریل کو ایف آئی اے نے لیسکو ڈویژن شاہ پور کے ایکسین راؤ کامران کو اربوں روپے کی اووربلنگ کرنے پر گرفتار کیا تھا، شاہ پور ڈویژن میں 4 کروڑ 90 لاکھ یونٹس کی اووربلنگ کی نشان دہی کی گئی تھی اوور بلنگ کا معاملہ سامنے آنے پر ایف آئی اے نے 9 اپریل کو لیسکو کے 7 ایس ایز کو انکوائری کے لیے طلب کیا تھا، تاہم لیسکو حکام نے یہ کہہ کر اس طلبی کو مسترد کیا کہ صرف نیپرا اووربلنگ کی جانچ پڑتال کر سکتا ہے، ایف آئی اے اوور بلنگ کے معاملے کو نہیں دیکھ سکتا، لیسکو افسران نے کہا تھا کہ وہ عید کے بعد وکلا کے ذریعے جواب دیں گے خیال رہے کہ وفاقی وزیر داخلہ محسن نقوی کی ہدایت پر بجلی کی تقسیم کار کمپنیوں میں اوور بلنگ کے خلاف آپریشن کیا جا رہا ہے، وفاقی وزیر داخلہ نے ملک بھر میں اوور بلنگ پر زیرو ٹالرنس پالیسی اپنانے کا حکم جاری کرتے ہوئے کہا اوور بلنگ کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی محسن نقوی نے ہدایت کی ہے کہ ملک بھر میں اوور بلنگ میں ملوث عملے کے خلاف بلا امتیاز کارروائی کی جائے، اوور بلنگ پر کوئی سمجھوتا نہیں ہوگا، ایف آئی اے افسران اوور بلنگ اور بجلی چوروں کے خلاف 100 فی صد کارکردگی دکھائیں، انھوں‌ نے یہ بھی کہا کہ بلوچستان اور خیبر پختونخوا کے حساس علاقوں میں ایف آئی اے کو سیکیورٹی فراہم کی جائے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں