36

کراچی: رمضان المبارک میں ڈاکوؤں نے 8 شہریوں کی جان لے لی

تفصیلات کے مطابق ماہ صیام میں بھی شہریوں کو امان نہ ملا، رمضان المبارک کے ابتدائی 15 روز میں شہر میں بے لگا ڈاکوؤں نے 8 کراچی کے شہریوں کی جان لے لی 3 رمضان کو ملیر میں ڈاکوؤں نے دودھ فروش کو قتل کیا، 5 رمضان کو عیسی نگری میں ڈاکوؤں نے ایک اور شہری کی جان لی، اس کے علاوہ تھانہ پاکستان بازار کی حدود میں ڈکیتی مزاحمت پر نوجوان محمد فرحان کو قتل کیا گیا 10 رمضان کو پاکستان بازار میں اختر مسیح پر گھر کی دہلیز پر فائرنگ کی گئی اسی روز ملیر میں ڈکیتی مزاحمت پر ڈاکوؤں نے انجینئر شعیب شفقت کو اس وقت قتل کیا جب وہ اپنی خالہ کے گھر افطاری پر پہنچا تھا 13 رمضان کو نارتھ کراچی میں ڈاکوؤں نے دکاندار عبدالرحمان کو قتل کیا، 14 رمضان کو لیاقت آباد کا رہائشی زوہیب سرجانی ٹاؤن میں ڈاکوؤں کا نشانہ بنا جبکہ 15 رمضان کو اورنگی ٹاؤن قطر اسپتال میں خاتون ڈاکوؤں کی فائرنگ سے جاں بحق ہوئیں پولیس کا اس حوالے سے کہنا ہے کہ رمضان میں اسٹریٹ کرائم کی 3 ہزار 300 سے زائد وارداتیں رپورٹ ہوئیں، مقابلوں کے دوران 4 ڈاکو ہلاک، 94 زخمی ہوئے، پولیس نے کارروائی کرتے ہوئے 148 اسٹریٹ کرمنلز کو گرفتار کیا اور 108 مختلف اقسام کے ہتھیار برآمد کیے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں