103

اداکارہ فرح نادر میں کینسر کی تشخیص

اداکارہ فرح نادر نے کہا ہے کہ کچھ عرصہ قبل گردوں کے تیسرے درجے کے کینسر کی تشخیص ہوئی تھی جس کا تاحال علاج جاری ہے انہوں نے ساء نیوز پر معروف میزبان مدیحہ نقوی کے مارننگ شو میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ کچھ عرصہ قبل بیمار پڑی تو متعدد ٹیسٹس کروائے جن سے گردے کے کینسر کی تشخیص ہوئی۔ فرح نادر نے کہا کہ آپریشن کے کچھ عرصے بعد ان کی کیموتھراپی کی گئی جو کہ جولائی سے ستمبر 2023کے درمیان تک ہوتی رہی کیموتھراپی کے وقت میں نے اپنے بال چھوٹے کروائے اور آپریشن سے زیادہ کیموتھراپی میں تکلیف ہوئی۔ انہوں نے لوگوں کو مشورہ دیا کہ وہ کیموتھراپی سے متعلق انٹرنیٹ پر کوئی معلومات سرچ کرنے کی کوشش نہ کریں، وہاں بہت ساری غلط اور خطرناک باتیں بھی لکھی ہوتی ہیں اداکارہ نے بتایاکہ آپریشن اور کیموتھراپی مکمل ہونے کے بعد اب ان کی ریڈیئیشن ہوگی جو کہ ڈیڑھ سے دو ماہ تک چلے گی فرح نادر کے مطابق تیسرے درجے کے کینسر کی تشخیص کے بعد اب بتدریج صحت یاب ہو رہی ہوں۔ اداکارہ نے بیماری کے وقت خیال رکھنے پر بیٹی کی تعریف کرتے ہوئے کہا کہ نیک اولاد اور اچھے رشتہ دار اللہ کی نعمت ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ اگر خدا کی مرضی ہو اور اپنے اہل خانہ کا ساتھ ہو تو بندہ کینسر جیسی بیماری کو بھی شکست دے سکتا ہے انہوں نے کہا کہ کینسر کی تشخیص کے باوجود مجھے کسی طرح کا کوئی خوف نہیں تھا مجھے احساس تھا کہ بچے اب بڑے ہوچکے ہیں، وہ اپنی زندگی سنبھال لیں گے جب بچوں نے مجھے کینسر سے متعلق بتایا تو میں نے پریشانی کا اظہار نہیں کیا میرے اندر خوف بھی نہیں تھا۔آپریشن تھیڑ میں بھی مسکرا رہی تھی۔ جب کہ اداکارہ کی بیٹی نے بتایا کہ والدہ مین گردے کے تیسرے درجے کے کینسر کی تشخیص ہوئی تھی، ان کا غدود 5 سینٹی میٹر تک بڑھ چکا تھا انہوں نے بتایا کہ کینسر کی تشخیص کے بعد انہوں نے بڑے بھائی کے ساتھ مل کر والدہ کو بتایا اور پھر تین دن کے اندر اندر ان کا آپریشن کیا گیا اداکارہ کی بیٹی کے مطابق ڈاکٹرز نے بتایا تھا کہ ان کی والدہ کی اوپن سرجری کی جائیگی یعنی گردے سے غدود نکالے جانے کے علاوہ بھی ان کے پھیپھڑوں کے قریب یا جسم کے دیگر حصوں میں پائے جانیوالے چھوٹے غدودوں کو بھی نکالا جائے گا مزید تفصیلات کے لیے ویڈیو ملاحظہ کیجئے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں