39

ظلِ شاہ کیس،عمران خان کی راہداری ضمانت 22 مئی تک منظور اسلام آباد ہائیکورٹ نے پولیس کو چیئرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری سے روک دیا

اسلام آباد : ظلِ شاہ کیس میں عمران خان کی راہداری ضمانت منظور کر لی گئی۔ تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ نے عمران خان کی راہداری ضمانت 22 مئی تک منظور کر لی ہے،چیئرمین پی ٹی آئی کی راہداری ضمانت ظلِ شاہ کیس میں منظور کی گئی،عدالت نے عمران خان کی 10 روز کیلئے حفاظتی ضمانت منظور کی۔ اسلام آباد ہائیکورٹ نے پولیس کو چیئرمین پی ٹی آئی کی گرفتاری سے روک دیا۔دوسری جانب اسلام آباد ہائیکورٹ نے سابق وزیراعظم عمرانخان کی اسلام آباد میں درج تمام مقدمات میں ضمامنت منظور کر لی ہے،عدالت کے فیصلے کا اطلاق اسلام آباد کی حدود تک ہوگا۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے القادر ٹرسٹ کیس میں چئیرمین پی ٹی آئی عمران خان کی دو ہفتے کے لیے ضمانت منظور کی۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے القادر ٹرسٹ کیس میں دو ہفتوں کے لیے عمران خان کو گرفتار کرنے سے روک دیا۔اسلام آباد ہائیکورٹ نے نیب کو نوٹس جاری کرتے ہوئے جواب طلب کر لیا۔ بعدازاں عمران خان کی دیگر درخواستوں پر سماعت شروع ہوئی۔وکیل سلمان صفدر نے استدعا کی کہ عدالت عمران خان کو کسی نامعلوم مقدمہ میں گرفتار نہ کرنے کا حکم بھی جاری کرے۔ جسٹس میاں گل حسن نے استفسار کیا کیا پٹیشنر کی پالیسی ہے کہ ریاستی رٹ چیلنج کرنے والوں کے خلاف کارروائی ہونی چاہئے؟۔وکیل نے بتایا جی،پٹیشنر نے سپریم کورٹ میں بھی تمام چیزیں واضح کر دی تھیں۔جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے ریمارکس دئیے کہ ریاست عمران خان کی سیکورٹی یقینی بنائے،عمران خان واضح ڈیکلریشن دیں کہ جوہوا اس کی مذمت کرتے ہیں۔ انہوں نے مزید ریمارکس دئیے کہ سلمان صفدر صاحب! سیدھا کہیں وہ عمران خان کوگرفتار کرنے کیلئے بے چین ہیں ،اتنے بے چین تھے کہ وہ قانون توڑ کر احاطہ عدالت سے گرفتارکرکے لے گئے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں