41

پی ٹی آئی کی ریلی،اسلام آباد میں کسی بھی اجتماع کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی،کریک ڈاؤن کیلئے 12 قیدی وینز اور 3 ایمبولینس بھی الرٹ رہیں گی،پولیس

اسلام آباد : پی ٹی آئی کی ریلی،اسلام آباد میں مظاہرین سے نمٹنے کیلئے حکمت عملی تیار کر لی گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق اسلام آباد کی حدود میں کسی بھی اجتماع کی اجازت نہ دینے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ اسلام آباد میں دفعہ 144 پر عملدرآمد یقینی بنایا جائے گا، جبکہ دفعہ 144 کی خلاف ورزی پر قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔پولیس کے ساتھ 1 ہزار ایف سی اہلکار بھی تعینات ہوں گے،کریک ڈاؤن کیلئے 12 قیدی وینز اور 3 ایمبولینس بھی الرٹ رہیں گی۔ اسی طرح پشاور میں سکیورٹی خدشات کی وجہ سے ضلعی انتظامیہ نے دفعہ 144 بھی نافذ کر رکھی ہے جبکہ تحریک انصاف آج پشاور میں بھی ریلی نکالے گی،ریلی گلبہار چوک سے چوک یادگار تک نکالی جائے گی۔دوسری جانب تحریک انصاف کو لاہور میں لبرٹی چوک سے ناصر باغ تک ریلی نکالنے کی اجازت مل گئی ہے،ڈی سی لاہور کی جانب سے اجازت نامہ جاری کر دیا گیا۔ضلعی انتظامیہ نے حلف لینے کے بعد ریلی کی اجازت دی۔ ضلعی انتظامیہ کے مطابق ریلی کی اجازت دن 1 بجے سے شام 6 بجے تک ہو گی،ریلی کیلئے استقبالیہ کیمپ نہیں لگائے جائیں گے،ریلی انتظامیہ ہی تمام روٹ کی سکیورٹی کی ذمہ دار ہو گی۔ اجازت نامے میں تحریک انصاف کی قیادت پر واضح کیا گیا کہ عدلیہ اور اداروں کیخلاف تقاریر کی اجازت نہیں ہو گی،سکیورٹی کیلئے فوکل پرسن اور پی ٹی آئی ذمہ دار ضلعی انتظامیہ سے تعاون کریں گے،پبلک پراپرٹی کو نقصان پہنچنے پر پی ٹی آئی انتظامیہ ذار ہو گی۔ اجازت نامے میں مزید کہا گیا کہ شرکاء کو کاروباری مراکز بند کرنے اور انہیں نقصان پہنچانے کی اجازت نہیں ہو گی،جلسہ گاہ اور اطراف میں اسلحے کی نمائش کی اجازت بھی نہیں ہو گی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں