41

الیکشن کیس کی سماعت، وزیر اعظم کا دورہ سعودی عرب منسوخ کرنے کا فیصلہ شہباز شریف نے کل سعودی عرب روانہ ہونا تھا اور وہاں ان کی نوازشریف سے ملاقات بھی ہونا تھی

اسلام آباد : الیکشن کیس کی سماعت کی وجہ سے وزیر اعظم نے دورہ سعودی عرب منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق وزیراعظم شہباز شریف نے کل سعودی عرب روانہ ہونا تھا اور وہاں ان کی نوازشریف سے ملاقات بھی ہونا تھی، تاہم سپریم کورٹ میں الیکشن کیس کی سماعت کے پیش نظر وزیراعظم نے اب دورہ سعودی عرب منسوخ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔واضح رہے کہ پاکستان مسلم لیگ ن کے قائد میاں محمد نواز شریف عمرے کی ادائیگی کے لیے سعودی عرب میں موجود ہیں۔ آج سے چند روز قبل سعودی عرب پہنچنے کے بعد نوازشریف کنگ عبدالعزیز ائیرپورٹ سے اپنے ہوٹل پہنچے تھے۔ سابق وزیراعظم اور مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف رمضان نے رمضان کا آخری عشرہ اپنے خاندان کے افراد کے ساتھ سعودی عرب میں گزارنے کا فیصلہ کیا تھا، انہوں نے عمرے کی سعادت بھی حاصل کر لی ہے، اسی طرح لیگی رہنما مریم نواز بھی لاہور سے جدہ پہنچیں۔چند روزہ قبل خبروں میں بتایا گیا تھا کہ دورہ سعودی عرب میں نواز شریف اور مریم نواز شاہی خاندان کے خصوصی مہمان ہوں گے ، نواز شریف عید کےبعد برطانیہ واپسی سے پہلے کچھ دن دوحا میں بھی قیام کریں گے۔ واضح رہے کہ سعودی شاہی حکام نے مسلم لیگ ن کے قائد نواز شریف کے ساتھ وزیراعظم شہباز شریف کو بھی عمرے کے لیے مدعو کیا ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیراعظم شہباز شریف کی فیملی پہلے سے ہی جدہ میں موجو دہے جبکہ وزیراعظم کے 26 رمضان کو سعودی عرب پہنچنے کا امکان ظاہر کیا جا رہا تھا۔تاہم اب انہوں نے اپنا دورہ سعودی عرب منسوخ کر دیا ہے۔ سابق وزیراعظم نواز شریف نومبر 2019 سے لندن میں زیر علاج ہیں۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں