23

انسداد دہشت گردی عدالت نے رانا ثناء اللہ کے وارنٹ گرفتاری منسوخ کر دئیے عدالت نے وزیر داخلہ کو 5 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کا حکم دے دیا،رانا ثناء اللہ کے وارنٹ گرفتاری گجرات میں درج مقدمے میں جاری کیے گئے تھے

گوجرانوالہ : گوجرانوالہ کی عدالت نے وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کے وارنٹ گرفتاری منسوخ کر دئیے۔ تفصیلات کے مطابق انسداد دہشت گردی عدالت میں وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کے نا قابل سماعت وارنٹ گرفتاری سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی،عدالت نے رانا ثناء اللہ کی وارنٹ گرفتاری منسوخ کرنے کی درخواست منظور کر لی،عدالت نے رانا ثناء اللہ کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری مسنوخ کرنے کا حکم دے دیا،وزیر داخلہ کو 5 لاکھ روپے کے ضمانتی مچلکے جمع کرانے کی بھی ہدایت کی گئی،عدالت نے کیس کی سماعت 28 اپریل تک ملتوی کر دی۔یاد رہے کہ انسداد دہشت گردی عدالت نے گزشتہ سماعت پر رانا ثناء اللہ کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے تھے۔ انسداد دہشت گردی عدالت نے وزیر داخلہ رانا ثناء اللہ کی آج حاضری سے استثنٰی کی درخواست خارج کی اور رانا ثناء اللہ کے ناقابل ضمانت وارنٹ گرفتاری جاری کیے۔ناقابل ضمانت وانٹ گرفتاری انسداد دہشت گردی عدالت کے جج رانا زاہد اقبال نے جاری کیے،عدالت نے قرار دیا کہ رانا ثناء اللہ کو گرفتار کر کے 28 مارچ کو پیش کیا جائے۔انسداد دہشت گردی عدالت نے ڈی پی او گجرات کے ذریعے تعمیل کرانے کا حکم دیا۔ رانا ثناء اللہ کے وارنٹ گرفتاری گجرات میں درج مقدمے میں جاری کئے گئے،مقدمہ اگست 2022 میں ق لیگ کے مقامی رہنما کی مدعیت میں درج کیا گیا تھا۔ جبکہ سیشن عدالت گوجرانوالہ نے 3 مارچ کو ہونے والے مسلم لیگ ن کے ورکرز کنونشن میں پارک سے جھولے چوری اور درخت کاٹنے کے الزام میں مریم نواز کو بھی طلب کیا گیا تھا۔ ایڈیشنل سیشن جج مرزا محمد اعظم نے مریم نواز کی طلبی کا نوٹس جاری کیا،ن لیگ سوشل میڈیا پنجاب کے ہیڈ،سٹی صدر اور جلسہ آرگنائزر کو بھی نوٹس جاری کیا گیا تھا۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں