31

وزیراعظم توہین عدالت کے شکنجے میں آ سکتے ہیں 90 روز میں نگران حکومت خود بخود ختم ہو جائے گی،13 سیاسی جماعتوں کا جنازہ دھوم سے نکلے گا،سربراہ عوامی مسلم لیگ شیخ رشید

راولپنڈی :عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید کا کہنا ہے کہ وزیراعظم شہباز شریف توہین عدالت کے شکنجے میں آ سکتے ہیں،90 دن میں نگران حکومت خود بخود ختم ہو جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق شیخ رشید نے ٹویٹر پر جاری اپنے بیان میں کہا ہے کہ حکومت نے مختلف اداروں سے سروے کرائے ہیں جس میں عمران خان کی سیاسی مقبولیت الیکشن کے التواء کا باعث بن گئی ہے،جو 30 اپریل کو الیکشن نہیں کروا رہے وه 8 اکتوبر کو بھی الیکشن نہیں کروائیں گے۔
مہنگائی نے تمام ریکارڈ توڑ ڈالے ہیں اور مہنگائی تقریباً 50 فیصد پر پہنچ گئی ہے،13 پارٹیوں کا سیاسی جنازہ دھوم سے نکلے گا۔دنیا کو پاکستان کی فکرہے لیکن ہم 10 کلو آٹے کے فوٹو کی کمپنی کی مشہوری کیلئے لگے ہوئے ہیں۔سابق وزیر داخلہ نے مزید کہا کہ آئی ایم ایف کی کوئی یقین دہانی نہیں اور ملک معاشی تباہی کی طرف بڑھ رہا ہے،سارا بوجھ عدلیہ کے کندھوں پر پڑ گیا ہے،حکمران گرینڈ مذاکرات کا جھانسہ دے رہے ہیں اور ساتھ ہی پی ٹی آئی کارکنوں کو گھروں سے اٹھا رہے ہیں۔شیخ رشید کا یہ بھی کہنا تھا کہ مینار پاکستان جانے والے راستے بند کیے جا رہے ہیں،کل تک ن لیگ کے وزرا کہتے تھے صوبائی اسمبلیاں توڑیں ہم الیکشن کروا دیں گے۔اب کہتے ہیں اکتوبرکی بھی ضمانت نہیں کیونکہ شکست ان کا مقدر ہے۔ انہوں نے آج مینارپاکستان پر ہونے والے جلسے میں شرکت کرنے کا اعلان بھی کیا۔یاد رہے کہ اس سے پہلے شیخ رشید نے کہا کہ حکومت کا مسئلہ اب آئی ایم ایف ہے اور نہ غریب کی بھوک ہے بلکہ حکمرانوں کو عمران خان کے کلین سویپ کا خوف ہے،بڑی قانونی جنگ شروع ہونے جا رہی ہے،آر یا پار ہو جائے گا۔ان کا مسئلہ سکیورٹی ہے اور نہ ہی پیسے ہیں،اپریل میں الیکشن نہیں ہو سکتے تو اکتوبر میں پیسے کہاں سے آئیں گے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں