19

سندھ ہائیکورٹ نے کورٹ رپورٹرز کوروزمرہ عدالتی رپورٹنگ کی اجازت دے دی

سندھ ہائیکورٹ نے کورٹ رپورٹرز کو روزہ مرہ کی عدالتی رپورٹنگ کی اجازت دے دی، عدالت نے 6 جون تک پیمرا نوٹیفکیشن پر عمل در آمد روک دیا چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ کی سربراہی میں 2 رکنی بنچ نے عدالتی کارروائی کی رپورٹنگ پر پابندی کے نوٹیفکیشن کے خلاف کورٹ رپورٹرز کی درخواست پر سماعت کی۔ عدالت نے آئندہ سماعت تک پیمرا نوٹیفکیشن پر عمل در آمد روک دیا ، پیمرانے 21 مئی کو نوٹیفکیشن جاری کیا تھا ، اس نوٹیفکیشن کی پابندی سے متعلق شقوں پر عملدرآمد روکا ہے۔ پیمرا کی جانب سے عدالتی کارروائی کی رپورٹنگ پر پابندی کا نوٹیفکیشن سندھ ہائیکورٹ میں بھی چیلنج کیا گیا تھا، درخواست امین انور، شوکت کورائی اور دیگر کی جانب سے دائر کی گئی جس میں پیمرا، وزارت انفارمیشن براڈ کاسٹ و دیگر کو فریق بنایا گیا درخواست میں مؤقف اپنایا گیا کہ پیمرا کی جانب سے عدالتی رپورٹنگ پر پابندی کا نوٹیفکیشن 21 مئی 2024 کو جاری کیا، پیمرا قواعد عدالتی لائیو رپورٹنگ کی اجازت دیتے ہیں، عدالتی رپورٹنگ پر پابندی عائد کرنے سے قبل اتھارٹی کی میٹنگ تک نہیں طلب کی گئی۔ درخواست میں کہا گیا کہ پیمرا قوانین کے تحت پابندی سے قبل کورٹ رپورٹرز کا مؤقف نہیں سنا گیا، کورٹ رپورٹنگ پر پابندی آئین کے آرٹیکل 8,9,10،18,19 اور 25 کی خلاف ورزی ہے۔ عدالت نے درخواست پر نوٹس جاری کرتے ہوئے سماعت 6 جون تک ملتوی کردی۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں