47

پاکستان آئی ایم ایف سے بڑا اور طویل مدت کا پروگرام لینے کا خواہاں

تفصیلات کے مطابق وزیر خزانہ محمد اورنگزیب نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آئی ایم ایف سے بڑا اور طویل مدت کا پروگرام لیناچاہتےہیں، پاکستان اپنے کوٹہ کے حساب سے بڑاپروگرام لینے کی کوشش کرے گا وزیر خزانہ کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف سے پاکستان کی تاریخ کاسب سےطویل مدت کا پروگرام لینا چاہتے ہیں، آئی ایم ایف پروگرام میں تسلسل رہیں گےتومعاشی نظم و ضبط رہےگامحمد اورنگزیب نے کہا کہ معیشت کی بہتری آئی ایم ایف سےزیادہ ہماری حکومت کاہدف ہے، وزیراعظم شہباز شریف معیشت کی بہتری کیلئےکلیئروژن رکھتےہیں اور وزیراعظم نے معاشی نظم و ضبط قائم رکھنے کی سخت ہدایت کی ہے ان کا کہنا تھا کہ آئی ایم ایف سےقرض پروگرام کی آخری قسط میں کوئی رکاوٹ نہیں، آئی ایم ایف نےموجودہ قرض کی آخری قسط میں1.1ارب ڈالردینےہیں وزیر خزانہ نے بتایا کہ آئی ایم ایف نئےقرض پروگرام کا ابتدائی خاکہ تیارکررہےہیں، معاشی استحکام آئی ایم ایف اور حکومت پاکستان کا مشترکہ ہدف ہے، معیشت کی بہتری کے لیے نگران حکومت نے توجہ سے کام کیا محمد اورنگزیب کا مزید کہنا تھا کہ نجکاری کے معاملات فواد حسن فواد نے بڑی دلچسپی اور محنت سے چلائے، ٹیکس آمدن کو ڈیجٹل طریقے سے جمع کرنا چاہتے ہیں، ٹیکس نظام میں شفافیت حکومت کی اولین ترجیحات میں شامل ہے، قومی آمدنی میں ٹیکسوں کا حصہ 10 فیصد تک پہنچانا چاہتے ہیں انھوں نے کہا کہ آئی ایم ایف سےماحولیات کی فنڈنگ پر بھی بات ہوسکتی ہے، ماحولیات کی بہتری کیلئےآئی ایم ایف کچھ ممالک کو کوٹے سے زیادہ قرض دیتارہا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں