24

اسپین نے باضابطہ طور پر فلسطین کو آزاد ریاست تسلیم کرنے کا اعلان کر دیا

ہسپانوی وزیراعظم پیڈرو سانچیز نے کہا ہے کہ آزاد فلسطین ریاست کا قیام ہی مشرق وسطیٰ میں امن کا واحد راستہ ہے۔ اس لیے آج ہم باضابطہ طور پر فلسطین کو ایک الگ ریاست کی حیثیت سے تسلیم کرتے ہیں عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق اسپین نے فلسطین کو تسلیم کرنے کا اعلان گزشتہ ہفتے ناروے اور سوئٹزرلینڈ کے ساتھ کیا تھا تاہم پارلیمنٹ سے اس کی منظوری لینا باقی تھا۔ اسپین نے حکومتی سطح پر فلسطین کو ایک الگ اور آزاد ریاست کے طور پر تسلیم کرنے کی منظوری دیدی جس کا اعلان وزیراعظم پیڈرو سانچیز نے میڈیا سے گفتگو میں کیا وزیراعظم پیڈرو سانچیز نے کہا کہ فلسطینی ریاست کو تسلیم کرنا نہ صرف تاریخی انصاف کا معاملہ ہے بلکہ اسپین سمیت دیگر یورپی ممالک کے اس اقدام سے مشرق وسطیٰ میں امن کو فروغ ملے گا ہسپانوی وزیراعظم نے مزید کہا کہ مشرق وسطیٰ میں امن کے قیام کا واحد راستہ ایک فلسطینی ریاست کا قیام ہے جو اسرائیلی ریاست کے ساتھ شانہ بشانہ کھڑے ہو۔ یاد رہے کہ اسپین، ناروے، آئرلینڈ کے فلسطین کو تسلیم کرنے کے بعد اب بیلجیئم نے بھی فلسطین کو تسلیم کرنے کا عندیہ ظاہر کیا ہے واضح رہے کہ سپین کی جانب سے اس اعلان کے بعد فلسطین کو تسلیم کرنے والے ممالک کی تعداد 146 ہوگئی ہے۔ قبل ازیں آئرلینڈ، ناروے کے وزیراعظم نے بھی فلسطین کو تسلیم کرنے کا اعلان کیا تھا ۔ یہ کوششیں ایسے وقت میں سامنے آئی ہیں جب غزہ میں حماس کو شکست دینے کے لیے اسرائیل کی جارحیت کی وجہ سے فلسطینی شہادتوں کی تعداد میں بہت زیادہ اضافہ ہوا ہے اور یہ عالمی سطح پر جنگ بندی اور خطے میں قیامِ امن کے لیے ایک دیرپا حل پر زور دینے کا سبب بنا ہے۔ 7 اکتوبر2023 سے غزہ پر اسرائیلی حملوں میں 36 ہزارسے زائد فلسطینی شہید اور 80 ہزار سے زائد زخمی ہوچکے ہیں جن میں اکثریت خواتین اور بچوں کی ہے ۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں