51

لاہور ہائی کورٹ ججز کو موصول خطوط کی فرانزک رپورٹ میں اہم انکشاف

لاہور: لاہور ہائی کورٹ کے ججوں کو ملنے والے خطوط میں بھی 15 فیصد آرسینک کا انکشاف سامنے آیا، آرسینک سونگھنے سے پھیپھڑے کی سوجن، ناک کی سوزش اور خون کا بہاؤ ہوسکتا ہے تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ کے ججز کو موصول ہونے والے خطوط سے متعلق تحقیقات جاری ہے لاہور ہائی کورٹ کے ججوں کو ملنے والے خطوط کی بھی فرانزک رپورٹ تیار کرلی گئی، فرانزک سائنس ذرائع نے بتایا کہ خط میں معمولی مقدار لیتھل آرسینک کی پائی گئی۔فرانزک رپورٹ میں کہنا ہے کہ آرسینک سونگھنے سے پھیپھڑے کی سوجن، ناک کی سوزش اور خون کا بہاؤ ہوسکتا ہے ، آرسینک کی شناخت گیس کروماٹوگرافی اور ماس اسپیکٹرو میٹری ٹیکنک سے ممکن ہوئی گذشتہ روز اسلام آباد ہائی کورٹ کے ججوں کو ملنے والے خطوط میں موجود پاؤڈر میں آرسینک کا انکشاف ہوا تھا مشکوک خطوط کی فرانزک رپورٹ سی ٹی ڈی کو مل گئی ہے، ذرائع کا کہنا تھا خطوط سے ملنے والے پاؤڈر میں پندرہ فیصد آرسینک پایا گیا، آرسینک زہرہوتا ہے، سونگھنے یا سانس میں جانےسےاعصابی نظام شدید متاثرہوتا ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں