52

گیارہ سال بعد شامی خاتون کی مکہ میں بچوں سے ملاقات، رقت آمیز مناظر

سعودی عرب: میں سوشل میڈیا پر ایک ویڈیو گردش کررہی ہے جس میں دکھایا گیا ہے کہ ایک شام سے تعلق رکھنے والی خاتون اپنے بچوں سے گیارہ سال بعد مل رہی ہے بین الاقوامی خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق شام میں جنگ کے باعث شامی خاتون اپنے بچوں سے جدا ہوگئی تھی اور ان سے نہیں مل سکی تھی، مکہ مکرمہ میں جب اس کی اپنے بچوں سے ملاقات ہوئی تو رقت آمیز مناظر دیکھنے کو ملے دونوں بچے اپنی ماں کو دیکھتے ہی تیزی سے ان کی جانب دوڑے اور گلے لگ گئے، بچے اپنی ماں سے لپٹ کر بے اختیار رونے لگے۔سامنے آنے والی ویڈیو میں دیکھا جاسکتا ہے مکہ کے ہوٹل میں ماں نے اپنے بچوں کو دیکھا تو انہیں صدا لگائی کہ ”میری زندگی“ ہوٹل کے استقبالیہ پر موجود افراد اس منظر کو دیکھ کراپنے جذبات پر قابو نہ رکھ سکے اور آبدیدہ ہوگئے، ان کا کہنا تھا خوشی ہے کہ بچے اپنی ماں سے مل گئے بچوں کا اس موقع پر کہنا تھا کہ اپنی ماں سے مل کر جو خوشی محسوس ہورہی ہے اسے لفظوں میں بیان نہیں کیا جاسکتا اضح رہے کہ شام میں 2011 کے بعد سے جنگ کا ماحول ہے، شامی شہریوں کی بڑی تعداد ملک چھوڑ کر دیار غیر میں جا چکی ہے

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں