بدین میں سیلابی پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ انتظامیہ نے انخلا کا ریڈ الرٹ جاری کردیا مساجد سے اعلانات

بدین : میں سیلابی پانی کی سطح میں مسلسل اضافے کے باعث آبادی کے زیر آب آنے کا خدشہ پیدا ہوگیا ہے انتظامیہ نے انخلا کا ریڈ الرٹ جاری کرتے ہوئے مساجد اور گاڑیوں کے ذریعے علاقے خالی کروانے کے لیے اعلانات شروع کردیے بدین میں سیلابی پانی کی سطح میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے جس کے بعد آبادی کے انخلا کا ریڈ الرٹ جاری کردیا گیا ہے لیفٹ بینک آؤٹ فال ڈرین ایل بی او ڈی میں پانی کی سطح مسلسل بلند ہو رہی ہے ضلعی انتظامیہ نے مساجد اور گاڑیوں کے ذریعے اسپیکر پر علاقہ خالی کرنے کا اعلان کرتے ہوئے آبادی سے اپیل کی ہے کہ وہ مال مویشی اور قیمتی سامان سمیت فوری طور گھر خالی کرکے محفوظ مقامات پر منتقل ہو جائیں مقامی ذرائع کا کہنا ہے کہ پانی50 کلومیٹر کے علاقے میں تباہی مچاتا ہوا بے قابو ہو چکا ہے اور اس کی سطح میں کمی کے بجائے وقت کے ساتھ ساتھ اضافہ ہو رہا ہے سیلابی پانی یونین کونسل اولیاجرکس ملکانی سمن سرکار پیر بودلو اور پنگریو کے سیکڑوں دیہات ڈبو چکا ہے آر ڈی 205 اور 207 کے درمیان پانی کمزور پشتوں پر شدید دباؤ کی وجہ سے اوورفلو ہوکر آبادی کے لیے خطرے کی گھنٹی بجا رہا ہے ذرائع کے مطابق ملک کے بڑے سیم نالہ ایل بی او ڈی میں پانی کی سطح میں مسلسل خطرناک حد تک اضافہ ہو رہا ہے ایل بی او ڈی آر ڈی 211 پر کٹ لگانے کی کوشش اور گزشتہ روز علاقے سے انخلا کے لیے جاری ریڈالرٹ کے بعد علاقے میں خوف پھیل چکا ہے پران ندی کے شگاف بند کرنے کی سرگرمیاں بھی غیرعلانیہ طور بند کر دی گئی ہیں پران ندی میں شگاف اور سکھر بیراج کی نہروں کا پانی 17 روز بعد بھی بند نہیں ہو سکا دوسری جانب دریائے سندھ میں کوٹری بیراج پر اونچے درجے کا سیلاب برقرار ہے تاہم پانی کی سطح میں بتدریج کمی آنا شروع ہوگئی ہے حکام کے مطابق جامشورو کوٹری بیراج پر پانی کی سطح میں کمی آنا شروع ہو گئی ہے بیراج میں پانی کی سطح میں کمی کے بعد دریا کنارے آباد علاقے اورکچے میں بھی پانی کی سطح میں کمی ہونے لگی اُدھر منچھر جھیل کی سطح میں مزید 3 انچ کی کمی آنے سے سطح 5 ‘ 122 فٹ پر آ گئی، جس کے بعد انڈس ہائی وے اور ریلوے ٹریک سے بھی پانی کم ہونا شروع ہو گیا ہے بھان سعید آباد اور کرمپور رنگ بند سے دباؤ کم ہونا شروع ہو گیا ہے جس کے بعد مقامی سرگرمیاں بحال ہونا شروع ہوئی ہیں مقامی ذرائع کے مطابق علاقوں سے نقل مکانی کرنے والے لوگ واپس بھان سعید آباد کی طرف لوٹ رہے ہیں مقامی انتظامیہ کی جانب سے صفائی مہم کےعلاوہ صوبائی حکومت کی طرف سے خیمے اورراشن سمیت دیگر امدادی سامان پہنچنا شروع ہوگیا ہے دریں اثنا سندھ کے علاقے بوبک میں کشتی الٹنے کے واقعے کے بعد پاک فوج کے بروقت اقدامات کے باعث کئی افراد کی جان بچا لی گئی ذرائع کے مطابق ریسکیو کیے جانے والے بزرگ، خواتین اور بچوں کو بہ حفاظت ان کے گاؤں منتقل کردیا گیا ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں